January 4, 2016 Jobs No Comments

   :کی تفصیل A-2016 (S)پاکستان نیوی میں بطور سیلر

مردون کے لیے مختلف شعبہ جات میں اعلیٰ پیشہ ورانہ مہارت(بشمول انجینئرنگ میں ڈپلومہ) اور خواتین کے لیے میڈیکل برانچ میں بحیثیت میڈیکل ٹیکنیشن خدمات سر انجام دینے کے مواقع

اہلیت کی شرائط:

  • قومیت: پاکستان کے مرد شہری (خواتین صرف میڈیکل برانچ کے لیے)
  • ازڈواجی حیثیت: غیر شادی شدہ

 

برانچ تعلیمی قابلیت عمر یکم جولائی 2016 کو قد کم ازکم
ٹیکنیکل میٹرک سائنس مجموعی طور پر کم زکم 65 فیصد نمبر 16سے20 سال 5فٹ4 انچ (162.5 سینٹی میٹر)
فیمیلی میڈیکل ٹیکنیشن(FMT) (صرف خواتین کے لیے) میٹرک سائنس مع بائیولوجی مجموعی طور پر کم ازکم 65 فیصد نمبر 16سے20سال 5 فٹ (152.4سینٹی میٹر)
میرین میٹرک سائنس /آرٹس مجموعی طور پر 60 فیصد نمبر 17سے21 سال 5فٹ6انچ(167.5 سینٹی میٹر)

 

طریقہ انتخاب اور بھرتی کا پروگرام

رجسٹریشن: 4سے20جنوری 2016 تک

  • اہل امیدواران رجسٹریشن کے لیے پاکستان نیوی کی ویب سائٹ joinpaknavy.gov.pkوزٹ کریں۔
  • تمام امیدواران کے لیے ضروری ہے کہ انٹری ٹیسٹ والے دن ڈائر یکٹر ریکروٹمنٹ نیول ہیڈکوارٹرز، اسلام آباد کے نام مبلغ۔50/ روپے کا کراس شدہ پوسٹل آرڈر یا مبلغ۔50/ روپے نقد لے کرائیں۔

تحریری امتحان

فروری 2016 صبح 8 : 00 بجے تمام رجسٹرڈ شدہ امیدواران کی ذہانت اور مندرجہ ذیل مضامین میں تحریری امتحان ہوگا۔

  • میٹرک سائنس: انگریزی ، ریاضی، فزکس، کیمسٹری اور معلومات عامہ
  • میٹرک آرٹس: انگریزی ، جزل ریاضی، جنرل سائنس اور معلومات عامہ

تحریری امتحان کے نتائج کا اعلان

  • تحریری امتحان کے نتائج25فروری2016 کو متعلقہ بھرتی دفتر سے معلوم کیے جاسکتے ہیں۔

انٹرویو اور طبی معائنہ

  • طبی معائنہ اور انٹرویو 26 فروری2016 سے25مارچ2016 کے دوران بھرتی دفتر میں ہوگا جس کی اطلاع متعلقہ بھرتی دفتر سے حاصل کی جاسکتی ہے۔

پر سنلٹی ٹیسٹ

  • طبی معائنہ اورانٹرویو میں موزوں قرار دیئے جانے والے امیدواروں کا پرسنلٹی ٹیسٹ مارچ 2016 میں متعلقہ بھرتی دفتر میں ہوگا۔

عارضی انتخاب

  • نیول ہیڈ کوارٹرز میں اوپن میرٹ کے ذریعے عارضی انتخاب ہوگا۔

حتمی انتخاب

  • ابتدائی بھرتی عارضی ہو گی۔ عارضی بھرتی شدہ سیلرز کا طبی معائنہ ٹریننگ سینٹر کراچی میں ہوگا۔ صرف مکمل طور پر موزوں سیلز ہی ملازمت کے اہل سمجھے جائیں گے ۔حتمی انتخاب کے بعد برانچ /ٹریڈ میں کوئی تبدیلی نہیں ہو گی۔

موبائل ریکروٹمنٹ:

  • پاکستان نیوی کی موبائل ریکر وٹمنٹ ٹیم فروری کے مہینے میں بھرتی کے سلسلے میں سندھ، بلوچستان، گلگت، بلتستان اور آزاد کشمیر دور دراز علاقوں کا دورہ کرے گی۔

ٹریننگ کا آغاز

  • ٹریننگ کا آغاز 18 جولائی2016 سے ہوگا۔

ملازمت کے دوران سہولیات

  • مروجہ تنخواہ اور الاؤنسز کے علاوہ ملازمت کے دوران اور ریٹائرمنٹ پر پر کشش مراعات اور سہولیات مہیا کی جاتی ہیں۔ چند ایک مندرجہ زیل ہیں:
  • ملازمت کے دوران مفت کھانا ، رہائش اور یونیفارم
  • دوران ملازمت انشورنس کا تحفط
  • شادی کے بعد فیملی رہائش/الاؤنس اور دیگر مراعات؎
  • ہوائی جہاز اور ریل کے سفر میں 50 فیصد رعایت
  • والدین ، بیوی اور بچوں کا ملٹری / نیوی کے ہسپتالوں میں مفت علاج
  • کورسز اور ڈیپوٹیشن پر بیرون ملک جانے کے مواقع
  • سب میرین، ایس ایس جی (نیوی) اورایوی ایشن (ایئر کرو) برانچز کے لیے 40 فیصد اضافی الاؤنس اور راشن
  • بہترین تعلیمی سہولیات
  • ریٹائر منٹ کے بعد بحریہ فاؤنڈیشن میں ملازت کے مواقع

نا اہلیت

  • مسلح افواج کے تربیتی اداروں سے نکالے اور بر خاست کیے گئے
  • سرکاری ملازمت سے بر طرف شدہ
  • کسی قانونی عدالت سے اخلاقی جرم کی بناء پر سزایا فتہ
  • اصل تعلیمی اسناد میں تحریف کرنا
  • درخواست فارم میں مطلوبہ معلومات کو چھپانا یا غلط معلومات دینا

نوٹ

  • ریکر وٹمنٹ ڈائر یکٹورٹ نیول ہیڈکوارٹرز کو براہ راست بھیجی گئی درخواستیں زیر غور نہیں لائی جائیں گی۔
  • پاکستان نیوی کے حاضر سروسر/ریٹائر ڈ سی پی اوز/ سیلرز کے بچوں کو ہدایت دی جاتی ہے کہ مورخہ20 جنوری2016 تک اپنے والد کے مندرجہ ذیل کاغذات متعلقہ بھرتی دفتر میں جمع کرائیں۔

الف:         ریٹائرڈ کے لیے:

ڈسچارج سلپ اور نادر ا فارم ب

ب:           حاضر سروس کے لیے:

اتھارٹی لیٹر اور نادرا فارم ب

مندرجہ ذیل  رعایت کا اطلاق ہو گا

  مارکس کی رعایت عمر کی بالائی حد میں رعایت
شہد کا بیٹا/بیٹی(لیول پرسنل) میٹرک مارکس میں 10 فیصد رعایت 2سال
لیول پرسنل (یونیفارم) سرونگ/ریٹائرڈ میٹرک میں 5 فیصد رعایت 1 سال
سندھی میٹرک مارکس میں 10 فیصد رعایت 2 سال
بلوچی میٹرک مارکس میں 20 فیصد رعایت 2 سال
آزاد کشمیر کے دور دراز علاقے میٹرک مارکس میں 10 فیصد رعایت 2 سال
FATA / PATA میٹرک مارکس میں 20 فیصد رعایت 2 سال
گلگت بلتستان میٹرک مارکس میں 20 فیصد رعایت 2 سال

 

رجسٹریشن کی آخری تاریخ

 2016- 20 جنوری

بعد ازاں موصول ہونے والی کوئی بھی درخواست قابل قبول نہیں ہو گی۔